حیدرآباد اور لاڑکانہ میں سندھ فوڈ اتھارٹی کی کارروائیاں

حیدرآبادمیں 6فوڈپوائنٹس،ایک بیکری اور گھی بنانے والی فیکٹری کو سیل کردیاگیالاڑکانہ کے صنعتی زون میں نمک کے چار کارخانے سیل،80ہزار روپے جرمانہ عائد

حیدرآباد، لاڑکانہ (نمائندگان دنیا )حیدرآباد اور لاڑکانہ میں سندھ فوڈ اتھارٹی کی ٹیموں نے مضر صحت اشیا بنانے اور فروخت کرنیوالوں کیخلاف کارروائیاں کرتے ہوئے 6فوڈ پوائنٹس ، بیکری ، گھی بنانے والی فیکٹری اور نمک کے چار کارخانے سیل کردیے ۔ حیدرآباد میں سندھ فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے لطیف آباد اور ٹنڈوآدم میں کارروائیاں کر کے حفظان صحت کے قوانین کی خلاف ورزی پر 6 فوڈ پوائنٹس،ایک بیکری اور گھی بنانے والی فیکٹری کو سیل کردیا۔ فوڈ اتھارٹی کے آپریشن ونگ نے 30سے زائد ہوٹلوں، جنرل اسٹورز، بیکریوں اور ڈیری شاپس کو نوٹسز جاری کیے جبکہ حفظان صحت کے قوانین کی خلاف ورزی پر ایک لاکھ 30ہزار روپے کے جرمانے عائد کیے ، اس موقع پر ڈپٹی ڈائریکٹر فوڈ اتھارٹی آپریشن ونگ امتیاز ابڑو کا کہنا ہے کہ حفظان صحت کے قوانین پر مکمل عملدرآمد تک کارروائیاں جاری رہیں گی۔ لاڑکانہ سے نمائندے کے مطابق سندھ فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے صنعتی زون میں چھاپہ مارکر نمک کے چار کارخانوں کو سیل کرکے مالکان پر 80ہزار روپے جرمانہ عائد کردیا ۔ ٹیم کے مطابق سیل کیے گئے کارخانوں کے مالکان کو معیاری نمک کی تیاری، صفائی کے بہتر انتظامات کرنے اور رجسٹریشن کے لیے کہا گیا تھا، تاہم انہوں نے اس پر عمل نہیں کیا ، جس پر چار کارخانوں کو سیل کرکے جرمانہ عائد کیا گیا ہے ۔